غزہ: اسرائیلی فوج نے اہم عمارت 'ال مہسل' بھی تباہ کردی

اسرائیلی فوج کے غزہ کی پٹی پر فضائی حملوں کے نتیجے میں اہم ثقافتی عمارت 'ال مہسل' تباہ ہوگئی۔
اسرائیلی فوج کی جانب سے آئے روز غزہ میں فضائی حملے کیے جاتے ہیں۔
گزشتہ روز حماس کی جانب سے اسرائیل کی حدود میں 200 راکٹ فائر کیے جانے کے بعد اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی پر واقع اہم ثقافتی مرکز 'ال مہسل' کی عمارت سمیت مجموعی طور پر غزہ کے 150 مقامات پر پر بمباری کی۔
اسرائیل کی جانب سے تباہ کن فضائی حملے میں اہم ثقافتی عمارت منہدم ہوگئی۔
اس حملے میں حاملہ خاتون سمیت 4 افراد جاں بحق جبکہ 18 افراد شدید زخمی بھی ہوئے۔
30 مارچ 2018 سے جاری اسرائیلی فوج کے فضائی حملوں اور فائرنگ سے کم از کم 157 فلسطینی جاں بحق ہوچکے ہیں۔
غزہ میں فضائی حملے کے بعد عمارت سے دھواں اٹھ رہا ہے — فوٹو: اے ایف پی
بمباری سے زخمی ہونے والی خاتون کو ال شفا ہسپتال لے جایا جارہا ہے — فوٹو: اے ایف پی
فلسطینی بچہ حملے میں تباہ ہونے والی عمارت کے ملبے کو دیکھ رہا ہے — فوٹو: اے ایف پی
غزہ میں بمباری کے بعد کا منظر — فوٹو: اے ایف پی
اسرائیل کے فضائی حملے کے بعد ملبہ ہٹایا جارہا ہے — فوٹو: اے ایف پی
اسرائیلی فوج کی جانب سے آئے روز غزہ میں فضائی حملے کیے جاتے ہیں — فوٹو: اے ایف پی
اسرائیلی فوج کی جانب سے آئے روز غزہ میں فضائی حملے کیے جاتے ہیں — فوٹو: اے ایف پی
اسرائیل کے فضائی حملے کے بعد ملبہ ہٹایا جارہا ہے — فوٹو: اے ایف پی
اسرائیل کے فضائی حملے کے بعد ملبہ ہٹایا جارہا ہے — فوٹو: اے ایف پی
اسرائیل کے فضائی حملے کے بعد ملبہ ہٹایا جارہا ہے — فوٹو: اے پی

Sign In or Register to comment.